پاکستانی

پسرور میں 3خواتین نے فائرنگ کرکے توہین رسالت کے ملزم کو قتل کردیا

ضلع سیالکوٹ کے شہر پسرور میں تین خواتین نے توہینِ رسالت کے ملزم کو گولی مار کر قتل کردیا۔ تفصیلات کیمطابق تین خواتین نے مبینہ طور پر 50سالہ فضل عباس ولد نظر عباس کو قتل کردیا۔ فضل عباس پر مبینہ طور پر توہینِ رسالت کا مرتکب ہونے کے بعد بھاگنے کا الزام لگایا گیا۔ واقعے سے متعلق مزید معلومات کے مطابق افشاں دختر اشرف، آمنہ دختر محمد خان اور رضیہ ذوجہ یاسین ہنگامی طور پر فضل عباس کے گھر میں داخل ہوئیں اور فضل عباس پر فائر شروع کردیے،نتیجے میں فضل شدید زخمی ہوگیا اور زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جابحق ہوگیا۔ پولیس کے مطابق خواتین کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور ان سے تفتیش کی جارہی ہے۔لاش کو بھی پوسٹ مارٹم کیلئے پولیس نے حراست میں لے لیا ہے
فضل عباس پر 2004میں توہینِ رسالت کا الزام عائد کیا گیا جس پر اس نے پاکستان چھوڑ دیا،اس واقعے سے متعلق پسرور سٹی پولیس اسٹیشن میں 2004میں ایف آئی آر بھی درج کرائی گئی۔

Related Articles

Back to top button