‏مسیحی خبریں

گگو منڈی: 14سالہ مسیحی بچی کے ساتھ رئیس زادے کی اغوا کے بعد زیادتی

نابالغ مسیحی بچی ریئس زادے کی ہاتھوں جنسی استحصال کا نشانہ بننے کا یہ واقع وہاڑی ضلع کے علاقے گگو منڈی میں پیش آیا ۔ 14سالہ ماریہ بی بی کو لینڈ لارڈ کے بیٹے اور اسکے ساتھیوں نے بندوق کی نوق پر اغواکیا تھا۔ پولیس کی جانب سے اس واقعے کی ایف آئی آر ابھی درج نہیں کی گئی، جبکہ متاثرہ خاندان نے اپنی بیٹی کی بازیابی کیلئے التجا کی۔
متاثرہ نابالغ مسیحی بچی ماریہ بی بی ولد اشرف مسیح(مرحوم) کھیتوں میں کام کررہی تھی جب امجد نامی شخص نے اس پر بری نظر ڈالی، رات کے وقت امجد اپنے ساتھیوں کے ہمراہ ماریہ کے گھر گھس آئے اور بندوق کی نوق پر اسے اغوا کرلیا۔ ماریہ کے دادا شاہاب مسیح اور والدہ بشرہ بی بی اپنی بیٹی کی بازیابی کیلئے وزیرِ اعلیٰ پنجاب سے مسلسل التجا کررہے ہیں کہ انکی فریاد سنی جائے۔
بشرہ بی بی اور انکے بھائی بوٹا مسیح نے زوردیا کہ چیف منسٹر پنجاب میاں شہباز شریف ،آر۔پی۔او ،ڈی پی او سمیت متعلقہ حکام اس معاملے سے متعلق فوری اقدام کریں۔ متاثرہ خاندان کا کہنا تھا کہ کہ اگر ہماری بچی کو بازیاب نہ کرایا گیا تو ہم اپنی زندگیاں ختم کرلیں گے۔
ماریہ کی والدہ نے بتایا کہ ہم نے تمام حکام سے فریاد کی ہے لیکن ہماری فریاد کوئی نہیں سنتا کیونکہ ہماری بچی کو اغواہ کرنے والے شخص امجد کا والد ایک بااثر شخصیت ہے۔ بوٹا مسیح نے بتایا کہ انکی جانب سے مقامی پولیس تھانے میں درخواست جمع کرائی گئی ہے لیکن پولیس نے واقعے سے متعلق کوئی ایف آئی آر درج نہیں کی اور نہ ہی ہماری بچی کی بازیابی کیلئے کوئی قدم اٹھایا گیا ہے

Related Articles

Back to top button