‏مسیحی خبریں

پھول نگر: مسلح افراد کا مسیحی بستی پر حملہ،مسیحیوں کو بدترین تشدد کا نشانہ بنایا

صوبہ پنجاب کے ضلع قصور کے علاقے پھول نگر میں قائم مسیحی بستی پر مسلح افراد نے حملہ کردیا۔22اپریل کو شائع ہونے و الی خبر کے مطابق یہ واقع نوعمر بچوں میں جھگڑوں کے باعث شروع ہوا۔ حملہ آوروں نے مسیحی مرد و خواتین کو بدترین تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے بری طرح سے زخمی کردیا۔
تفصیلات کیمطابق حملے کی وجہ آفاق مسیح ولد پولوس مسیح کے بیٹے اور ایک مسلم شخص بنام شانی کے درمیان جھگڑا بتائی جارہی ہے۔ شانی نے مبینہ طور پر آفاق کا موبائل چھین لیا جس کی وجہ سے دونوں میں ہاتھا پائی شروع ہوگئی۔مسیحی بستی پر حملہ کرنے والوں میں حافظ،حمزہ،ساغر،آصف جمیل، شانی، کاشی،مظہر اور دیگر شامل ہیں۔ یہ حملہ آور مسیحی بستی میں داخل ہوئے اور مسیحیوں کو ہراسا کرنے کیلئے دھمکانا شروع کردیا۔ مقامی مسیحیوں نے بتایا کہ حملہ آوروں کی تعداد 21تھی ۔
مسلح افردا نے گلیوں میں موجود ہر نظرآنے والے شخص کو بری طرح مارا پیٹا،مزید برآں حملہ آور مسیحیوں کے گھروں میں داخل ہوگئے اور مارپیٹ شروع کردی۔ حملہ آوروں کی جانب سے ہوائی فائرنگ کی گئی جس کی وجہ سے علاقے میں دہشت اور خوف چھایا رہا، حملہ آوروں نے مسیحی خواتین کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا۔ تاہم مقامی تھانے میں ایک ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے۔ مقامی مسیحیوں نے شکوہ کیا کہ انکی فریاد سنی نہیں جارہی اور ملزمان کیخلاف کوئی کاروائی کرنے میں پولیس فعال نظر نہیں آتی کیونکہ ملزمان کسی مذہبی تنظیم سے منسلک ہیں۔

Related Articles

Back to top button