‏مسیحی خبریں

فیصل آباد 12 سالہ مسیحی لڑکی کا اغوا,5 ماہ تک قید کر کے اس سے زیادتی

فیصل آباد میں ایک 12سالہ لڑکی کو اغواءکرکے اس کی زبردستی 45سالہ مرد سے شادی کروا دی گئی۔ برطانوی اخبار میل آن لائن کے مطابق اس کم عمر مسیحی لڑکی کو اغواءکے بعد جانوروں کے باڑے میں زنجیر سے باندھ کر رکھا گیا جہاں وہ دن بھر جانوروں کا گوبر صاف کرتی اور دیگر کام کاج کرتی۔ معصوم لڑکی نے اسی حالت میں 5ماہ گزارے اور بالآخر گزشتہ دنوں پولیس نے اسے اغواءکاروں کے چنگل سے نجات دلائی۔

رپورٹ کے مطابق ان پانچ ماہ میں لڑکی کو جنسی تشدد کے ساتھ ساتھ جسمانی تشدد کا نشانہ بھی بنایا جاتا رہا۔بازیابی کے وقت اس کے ٹخنوں پر درانتی سے کٹ لگائے جانے کے نشانات موجود تھے۔ لڑکی کے باپ کا کہنا تھا کہ ”میری بیٹی نے بازیابی کے بعد مجھے بتایا کہ اس کے ساتھ وہاں غلاموں کی طرح سلوک کیاجاتا تھا۔اسے 24گھنٹے زنجیر سے باندھ کر رکھا جاتا اور دن بھر کام کرنے پر مجبور کیا جاتا۔“اس کا کہنا تھا کہ ”میری بیٹی کو گزشتہ سال 12جون کو اغواءکیا گیا تھا۔ ہم کئی بار پولیس کے پاس گئے لیکن انہوں نے ایف آئی آر تک درج نہیں کی۔“

Source
dp