بین الاقوامی‏مسیحی خبریں

بھارت میں 34 سالہ مسیحی کو چرچ کے باہر قتل کردیا گیا

بھارت کی ریاست تامل ناڈو کے شہر چینائی میں ایک مسیحی کو قتل کرنے کا واقع پیش آیا۔ مسیحی شحص پر چاقو اور برچھوں سے لیس آدمیوں کے ایک گروہ نے حملہ کیا۔ رپورٹس کے مطابق مسیحی شخص چرچ کی ایک تقریب میں دعا کررہا تھا لیکن جب وہ چرچ سے باہر آیا تو اس پر حملہ کردیا گیا۔
جی۔ دانسخران پینتی کاسٹل چرچ کا رکن تھا اسکے علاوہ ایک سیاسی پارٹی کا کونسلر بھی تھا۔ مقتول پیشے سے ریئل اسٹیٹ کے بزنس نے وابستہ تھا۔ دی ٹائمز آف انڈیا کے مطابق کہا گیا ہے کہ یہ معلوم کرنے کی کوشش بھی کی جارہی ہے کہ یہ واقع کسی کاروباری دشمنی یا رنجش کے باعث تو رونما نہیں ہوا۔
دانسخران چرچ میں دعا کررہا تھا،فون پر کال آئی جس کے بعد وہ چرچ سے باہر آیا،جہاں اسے حملہ آوروں نے گھیر لیا اور اسے قتل کردیا۔ حملہ آور موقع واردات سے تین موٹرسائیکلوں پر سوار ہوکر بھاگ گئے۔ گلوبل کونسل آف انڈین کرسچینز کے صدر ساجن جارج نے کہا ہے کہ پولیس واقعے کی تفتیش کررہی ہے لیکن دانسخران کو اسکے مذہب کی وجہ سے ہی قتل کیا گیا ہے۔

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں