پاکستانی‏مسیحی خبریں

ہمیں ہمارے حقوق دیں پھر مینارٹیز ڈے منائیں گے: جے سالک

اسلام آباد: 11 اگست، 2016 کنوینر عالمی اقلیتی الائنس اور آرگنائزر عوامی مسیحا پارٹی کے رہنما جناب جے سالک نے ایک اہم پریس کانفرنس “اقلیتوں کے حقوق” پر اسلام آباد میں اپنی رہائش گاہ پر خطاب کیا. انہوں نے کہا کہ غیر ضروری دنوں کو منانے کی بجائَےاقلیتوں کو حقوق دینے پر ترجیح دی جانی چاہیے. بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح نے 1947 میں پہلی دستور ساز اسمبلی میں 11 اگست کو اقلیتوں کا دن قرار دیا اور کہا کہ اقلیتیں پاکستان کی مقدس امانت ہیں اور برابر کے شہری ہیں۔
 جے سالک کا کہنا تھا محمد علی جناح کے خیالات کو فراموش کیا جا رہا ہے ہمارا ایک دن اقلیتی ڈے کے طور پر منانا بے کار ہے انہوں نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم میں نہ صرف اقلیتوں فیڈرل سے نکال دیا گیا ہے بلکہ ان سے صوبائِی حق بھی چھین لیا گیا جوکہ قائد اعظم محمد علی جناح کے اقوال کی نفی ہے . انہوں نے کہا کہ اقلیتیں ابھی الجھن میں ہیں کہ وہ 11اگست یا 14اگست، ہے جو نہ صرف قومی دن کی اہمیت کو کم کرنے بلکہ قوم کو توڑنے کا سبب ہو سکتا ہے انہوں نے کہا کہ 11 اگست کو اقلیتی دن کا اعلانیہ پاکستانی قوم کو تقسیم کرنے کی ایک بدترین سازش ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتں وزیر اعظم بننے کا حق کھو چکے ہیں، اقلیتی صوبوں کو وفاق سے دھکیل دیا گیا ہے، اقلیتوں نے اپنی انتخابی حقوق کا نتیجہ بھی پاکستان کی سپریم کورٹ میں ایک سال پہلے اخذ کیا گیا تھا جب، اقلیتی وزارت کو ہی غایب کر دیا گیا تھا۔ کچی بستیاں بدترین حالت میں ہیں اور یہاں تک کہ زندگی کی بنیادی سہولیات کی فراہمی نہیں ہے، نجکاری سینیٹری کارکنوں کے حقوق کو تباہ کر دیا گیا ہے اور انہیں ذلیل کیا جا رہا ہے اور میری کالج، گورڈن کالج اور اقلیتوں کے بہت سے دیگر خصوصیات حکومت کے قبضہ میں ہے جے سالک کا کہنا تھا کہ جب آپ اقلیتوں کے تمام مندرجہ بالا حقوق دینے کے لئے قابل ہو جائیِں گے تب آپ کو اس دن کا جشن منانے کا حق حاصل ہوگا۔

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں