پاکستانی‏مسیحی خبریں

فاروق آباد: چودہ سالہ مسیحی بچی کیساتھ اجتماعی زیادتی،سینیٹر کامران مائیکل کا نوٹس

صوبہ پنجاب کے ضلع شیخوپورہ کے علاقے فاروق آباد میں مسیحی بچی کیساتھ اجتماعی زیادتی کا واقعہ پیش آیا، اس گھنونے عمل کے بعد ملزمان بچی کو نازک حالت میں چھوڑ کر بھاگ گئے۔ تفصیلات کے مطابق ایک مقامی مسلمان شخص اور اسکے ساتھیوں نے مسیحی لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ 
اس واقعے کے بعد  14 سالہ مسیحی لڑکی کو ہسپتال نازک حالت میں لایا گیا،اس وقت واقعے کا شکار مسیحی لڑکی ہسپتال میں داخل ہے جہاں اسے طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔ واقعے کے مرکزی ملزم کی پہچان محمد اقرار کے نام سے ہوئی ہے جس نے ساتھیوں سمیت مسیحی بچی کو جنسی زیادتی اور تشدد کا نشانہ بنایا،تاہم ابھی تک اسکے ساتھیوں کے ناموں کا پتہ نہیں چل سکا۔
یہ واقعہ مسیحی رکن پنجاب اسمبلی شکیل مارکس کھوکھر کے نوٹس میں لایا گیا،بعد میں اس واقعے کے بارے میں وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق سینیٹر کامران مائیکل کو بتایا گیا۔رکن پنجاب اسمبلی شکیل مارکس نے بتایا کہ وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق کامرا ن مائیکل نے ملزمان کیخلاف کاروائی کیلئے حکام کو ہدایات دی ہیں کہ قصورواران کو جلد از جلد گرفتار کرکے سزا دلائی جائے۔

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں