پاکستانی‏مسیحی خبریں

سیالکوٹ : 23 سالہ مسیحی لڑکے نے غیرت کے نام پر بہن کو قتل کردیا

پنجاب (روزنامہ دنیا پاکستان) میں مسیحی شخص نے اپنی بہن کو غیرت کے نام پر قتل کردیا،یہ افسوس ناک واقع پنجاب کے شہر سیالکوٹ میں پیش آیا۔ سیالکوٹ پولیس کے اعلیٰ افسر رانا ذوالفقار کا کہنا تھا کہ 23 سالہ ثاقب عشق مسیح نے اپنی سوئی ہوئی ہمشیرہ انعم کے سرپر ڈنڈا مار کر ہلاک کردیا،مزید انہوں نے بتایا کہ انعم کے والد نے اپنے بیٹے کیخلاف مقدمہ درج کرایا ہے۔

سینیٹر شیری رحمان نے مسیحی آئسکریم فروش پر تشدد کی خبر کا نوٹس لے لیا

واقعے کی تفصیلات کے مطابق انعم عشق مسیح اپنے پڑوس کے ایک مسیحی لڑکے کیساتھ پسند کی شادی کرنا چاہتی تھی مگر گھر والے اس شادی کے حق میں نہ تھے،انعم نے ہفتے کو اپنے گھر والوں سے شادی کرنیکی ضد کی جسکی وجہ سے اس کا بھائی اس سے سخت ناراض تھا۔ پولیس نے لڑکی کے بھائی ثاقب مسیح کو حراست میں لے لیا ہے۔
اس واقعے پر سماجی مسیحی کارکن شمون گل کا کہنا تھا کہ پاکستان میں مسیحی برادری میں خواتین کے غیرت کے نام پر قتل کے واقعات شاذونادر ہی رونماہوتے ہیں،غیرت کے نام پر قتل کے واقعہ کا مذہب سے کوئی تعلق نہیں۔ایسے واقعات سماجی مسائل سے پیدا ہورہے ہیں۔ پاکستان میں ہر سال ایک سو سے زائد خواتین غیرت کے نام پر اپنے رشتہ داروں کے ہاتھوں قتل ہوتی ہیں۔ 

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں