پاکستانی‏مسیحی خبریں

کم عمر مسیحی لڑکے کو گلے میں پھندا ڈال کر ہلاک کردیاگیا,3 ملزمان گرفتار

سلمان مسیح نامی مسیحی لڑکا اصطبل میں مزدوری کرتا تھا،جہاں پر اس کی لاش لٹکتی پائی گئی۔ ضلع گوجرآنوالہ کے قصبے قلعہ دیدار سنگھ کے گاؤں چہل کلاں میں یہ واقعہ رونما ہوا۔ گوجرآنوالہ(نوائے مسیحی)12سالہ سلمان مسیح نامی لڑکا ایک اصطبل میں کام کرتا تھا۔ چند روز قبل وہ کام چھوڑ کر گھر واپس آگیا،مزید کام نہیں کرنا چاہتا تھا۔ لیکن مالکان سلمان مسیح کو کام کرنے کیلئے اپنے ساتھ لے گئے اور گزشتہ روز 11بجے کے قریب اسکی لاش عالم چوک کے قریب واقع اصطبل کے چھت سے لٹکتی ہوئی پائی گئی۔ جس کے بعد علاقے میں یہ خبر پھیل گئی۔کم عمرلڑکے سلمان مسیح کی لاش کو ڈی۔ایچ۔کیو ہسپتال میں پوسٹ مارٹم کے بعد 2بجے ورثاء کے حوالے کردیاگیا۔ پولیس کی جانب سےایف۔آئی۔آر کاٹ کر3 ملزمان کو گرفتار کرلیاگیا ہے۔
روزنامہ دنیا نیوز میں شائع ہونیوالی خبر کے مطابق قلعہ دیدار سنگھ,ضلع گوجرآنوالہ کے گاؤں چہل کلاں کے گیارہ سالہ لڑکے نے گلے میں پھندا ڈال کر خود کشی کرلی۔
بتایا جاتا ہے کہ سلیمان مسیح11سالہ لڑکے ولد ہدایت  مسیح نے گزشتہ صبح گلے میں پھندا ڈال کر خودکشی کرلی ،جبکہ ورثاء کا کہنا ہے کہ انکے بیٹے کو قتل کیا گیا۔ گوجرآنوالہ سے کرائم رپورٹر(روزنامہ دنیا)کے مطابق سلمان کے والد کی مدعیت میں اورنگزیب ،جہانگیر اور ہمایوں نامی 3افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا۔

http://e.dunya.com.pk/detail.php?date=2016-05-09&edition=GUJ&id=2352766_53597441

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں