سروسز اسپتال میں تشدد سے جاں بحق سنیل مسیح کے لواحقین کا احتجاج

سروسز ہسپتال میں ینگ ڈاکٹرز ،طبی عملے اور سیکورٹی گارڈز کے مبینہ تشدد سے ہلاک موٹر وے پولیس کے ملازم سنیل سلیم کے لواحقین نے گزشتہ روز لاہور پریس کلب کے باہر قاتلوں کی عدم گرفتاری پراحتجاجی مظاہرہ کیا۔شدید غم و غصہ میں مبتلا مظاہرین نے عندیہ دیا کہ اگرسفاک قاتل گرفتار نہ کئے گئے تو احتجاج کا دائرہ کار ملک بھر کی مسیحی برادری اور علاقوں میں پھیلادیا جائے گا۔اس موقع پر مظاہرین نے پریس کلب کے باہر کئی گھنٹے تک ٹریفک چاروں اطراف سے روکی رکھی اورینگ ڈاکٹرز اور سیکورٹی گارڈز کے خلاف نعرے لگائے۔

قاتلوں کی گرفتاری کے علاوہ مظاہرین نے اس بات کا مطالبہ بھی کیا کہ مرنے والے سنیل سلیم مسیح اور ان کے بھائیوں، بہن اور بہنوئی کے خلاف درج کی جانے والے ایف آئی آر کو ختم کیا جائے۔ یہ مرنے والے اور اس کے لواحقین کے خلاف زیادتی اور ان کو انصاف کی فراہمی میں روڑے اٹکانے کے مترادف ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں