پوپ فرانسس آئندہ سال فروری میں عرب امارات کا دورہ کریں گے

ویٹی کن کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ پاپائے اعظم فرانسس آئندہ سال 2019 خ س میں متحدہ عرب امارات کا سرکاری دورہ کریں گے۔ان کو اس تاریخی دورہ کی دعوت اماراتی ولی عہد شیخ محمد بن زیدالنہیان نے دی ہے۔یوں پاپائے اعظم فرانسس جزیرہ نما عرب کا دورہ کرنے والے پہلے پاپائے اعظم بن جائیں گے۔پاپائے اعظم اپنے دورہ کے دوران یہاں منعقد ہونے والی بین الاقوامی بین المذاہب اجلاس میں شرکت کریں گے جس میں خصوصی خطاب بھی کریں گے۔اس دورہ کی دعوت متحدہ عرب امارات کی کاتھولک کلیسیاء کی جانب سے بھی دی گئی ہے۔ویٹی کن سے جاری ہونے والے اعلامیہ کے مطابق پاپائے اعظم کا یہ دورہ 3 تا 5 فروری یعنی تین دن پر محیط ہوگا۔پاپائے اعظم پاناما میں ہونے والے عالمی یوم نوجواناں کے اختتام پر دورہ امارات پر پہنچیں گے۔

پاپائے اعظم کی جانب سے اس دورہ کے اعلان کے فوراً بعد اماراتی وزیراعظم شیخ محمد بن راشدالمکتوم نے اس فیصلہ پرخوشی کا اظہار کرتے ہوئےاس کا خیرمقدم کیا ہے۔وزیراعظم کا کہنا ہے اس دورہ سے باہمی تعلقات کو فروغ و مضبوطی اور ایک دوسرے کو سمجھنے میں مدد ملے گی۔پاپائے اعظم کے دورہ سے بین المذاہب مکالمہ کو ٹھوس بنیادوں پر مزید فروغ ملے گا۔وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ اس سے قیام امن کو فروغ ملے گا اور ہم صحیح سمت کا تعین کرکے اس پر چل نکلیں گے۔ادھر جنوبی عرب کے رسولی منتظم بشپ پال ہنڈر نے بھی اس پر اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے دورہ کا خیرمقدم کیا ہے۔بشپ ہنڈر نے بتایا ہے کہ گو پاپائی دورہ کی تفصیلات سرکاری طور پر ویٹی کن سے جاری کی جائیں گی لیکن توقع ہے کہ پاپائے اعظم اس دورہ کے دوران 5 فروری کو ابوظہبی میں ایک بڑے عبادتی اجتماع میں پاک ماس کی قیادت کریں گے۔دریں اثناء ویٹی کن کی جانب سے اس دورہ سے متعلق لوگو بھی جاری کیا گیا جس میں مقدس فرانسس اسیسی کی مشہور زمانہ دعا کے ابتدائی کلمات درج ہیں جس میں وہ استدعا کرتے ہیں کہ اے خدا مجھے امن کا وسیلہ بنادے