مسیحی وکیل شہبازسہوترا نیب پراسیکیوٹر تعینات

نوجوان مسیحی وکیل شہبازسہوتراایڈووکیٹ کو قومی احتساب بیورو(نیب)کی جانب سے سندھ ریجن کے لئے ڈپٹی پراسیکیوٹر تعینات کردیا گیا ہے۔اس طرح ان کو یہ اعزاز حاصل ہوگیا ہے کہ وہ ملکی تاریخ میں نیب کی جانب سے تعینات ہونے والے پہلے اورواحد مسیحی وکیل ہیں۔ان کی یہ تعیناتی اس بات کی مظہر ہے کہ ان کی ایسے کیسوں پر قانونی مہارت وگرفت ہے۔شہبازسہوترانے ”آگاہی“ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ خداوند کے شکرگذار ہیں کہ ان کو اس خدمت کے لئے سینکڑوں میں سے چنا گیا ہے۔انہوں نے بتایا ہے کہ ان کو اسلام آباد ہیڈکوارٹرز سے تعیناتی کا نوٹیفیکیشن موصول ہوگیا ہے اور انہوں نے نیب دفتر کو اپنی دستیابی سے آگاہ کردیا ہے۔بطور نیب پراسیکیوٹر اپنے کردار سے متعلق بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نیب کا ادارہ ملک میں بدعنوانی کے خاتمے کے لئے بڑااہم کردارادا کررہا ہے تو مجھے اس سلسلہ میں کام کرنا ہوگا،شہبازسہوترا نے کہا کہ نیب کی پراسیکیوشن ٹیم کا حصہ بننے پر ان پر یہ ذمہ داری عائد ہوگئی ہے کہ وہ احتساب عدالتوں میں پیش ہوکر ایسے عناصر کو سزادلوانے میں اپنا کردارادا کریں جنہوں نے حکومتی عہدوں کا ناجائزاستعمال کرتے ہوئے اور اپنے عہدوں و اختیارات کا فائدہ اٹھاکر بدعنوانی کی۔شہباز سہوترا نے بتایا کہ ایک طویل و پیچیدہ طریقہ کار اپناتے ہوئے نیب نے ان کی اچھی طرح چھان بین کرکے اور پیشہ وارانہ کیرئیر میں حاصل ہونے والی کامیابیوں کے پیش نظر مجھے بطور پراسیکیوٹر تعینات کیا ہے۔ان کے دائراختیار میں ایسے کیسز آئیں گے جو نیب عدالت میں سندھ کی عدالتوں میں چل رہے ہیں جن کی اکثریت کراچی کی عدالتوں میں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں