خیرپور میں مندر پر حملہ کرنیوالوں کو گرفتار کیا جائے:پاکستان ہندو کونسل

پاکستان ہندوکونسل نے خیرپور میں مندرپرحملہ کرنیوالوں کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہےکہ شرپسندوں نے حملے میں ہندوؤں کی مقدس کتاب گیتااورمندر میں رکھی گئی مورتیوں کو جلایا ہے۔ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ حملہ کرنیوالوں کو قانون کے کٹہرے میں لایاجائے۔یہ افسوس ناک واقعہ کنب شہر میں کوٹ ڈیجی کے مقام پر پیش آیا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ہم غیرمسلم اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنانے کیلئے سپریم کورٹ کی قائم کردہ کمیٹی پراعتماد کرتے ہیں۔پاکستان ہندو کونسل کے سیکریٹریٹ میں ایک اہم پریس کانفرنس میں سرپرست اعلیٰ اورممبرقومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کماروانکوانی نے بتایا کہ شعیب سڈل کی سربراہی میں کمیٹی 14فروری کو خیبرپختونخوا کادورہ کرے گی۔ 27 فروری کو لاہور میں وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقات کی جائے گی جبکہ صوبہ سندھ سمیت دیگر حصوں میں جاری جدوجہد میں تیزی لائی جائے گی۔
اس موقع پر پاکستان ہندو کونسل کے صدر گوپال، سیکریٹری جنرل سمیت دیگر عہدے داران بھی موجود تھے۔ ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر رمیش کمار نے کہا کہ پاکستان ہندوکونسل کو دستیاب معلومات کے مطابق آٹھویں جماعت تک کے نصاب تعلیم سے قابل اعتراض مواد ختم ہوچکا ہے۔سپریم کورٹ کے احکامات کے مطابق ملک بھر کے تمام تعلیمی نصاب سے قابل اعتراض مواد ختم کیا جانا ضروری ہے۔اس حوالے سے حکومت کے ساتھ جامع پالیسی کیلئے تعاون کیا جارہا ہے۔دریں اثناءوزیراعظم عمران خان نے خیرپور میں مندر پر حملے اور اس کو نذرآتش کرنے کا نوٹس لے لیا ہے اوراس کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔انہوں نے متعلقہ اداروں سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔عمران خان کا کہنا ہے کہ اس میں ملوث افراد کو جلد گرفتار کرکے ان کو قرار واقعی سزادلوائی جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں