کرپشن کے الزام میں سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل گرفتار

قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق وفاقی وزیر پورٹس اینڈ شپنگ سینیٹر کامران مائیکل کو لاہور سے گرفتار کرلیا ہے۔نیب کراچی کی ٹیم نے ان کو کوٹ لکھپت سے ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا۔نیب اعلامیے کے مطابق ان کو دوران وزارت اختیارات کے ناجائز استعمال اور آمدن سے زائد اثاثہ جات پر حراست میں لیا گیا ہے۔نیب کی جانب سے ان پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ ان کے بحیثیت وفاقی وزیر اقدامات سے قومی خزانہ کو نقصان پہنچااور وہ متعدد غیر قانونی اقدامات میں ملوث ہیں۔انہوں نے اپنے دور وزارت میں کئی ایک غیرقانونی بھرتیاں کیں۔کامران مائیکل نے کراچی پورٹ ٹرسٹ کے پلاٹس مختلف من پسند لوگوں میں غیر قانونی طور پربانٹے۔نیب کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پہلے ہی ایسے 16 پلاٹس کے حوالے سے کامران مائیکل کیخلاف ریفرنس دائر ہے۔کامران مائیکل نے سائٹس الاٹ کرنے کے عوض بھاری رشوت لی اور بطور وزیر 3 کمرشل سائٹس اپنے من پسند افراد کو الاٹ کیں۔ان کو کل کراچی احتساب عدالت میں ریمانڈ کے لئے پیش کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں