پاکستانی

سیالکوٹ کی عاصمہ دوران علاج دم توڑ گئی

سیالکوٹ میں شادی سے انکاری مسیحی لڑکی عاصمہ جسے مسلم لڑکے رضوان گجر نے مبینہ طور پر مٹی کا تیل چھڑک کر آگ لگادی تھی میو اسپتال کے برن یونٹ میں پانچ دن تک موت و زیست میں مبتلا رہنے کے بعد دم توڑ گئی ہے۔اس کا 90 فیصدی جسم جل گیا تھا جس کے نتیجہ میں وہ دوران انتقال کر گئی۔اس کے انتقال کے بعد مقامی پولیس نے اس واقعہ کی درج ایف آئی آر میں قتل کی دفعہ بھی شامل کرلی ہے۔عاصمہ کی نعش کو سیالکوٹ منتقل کیا جارہا ہے جہاں اس کی مسیحی جنازہ کی رسومات کی ادائیگی کے بعد اس کی مبارک پورہ قبرستان میں تدفین عمل میں لائی جائے گی۔

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں