پاکستانی‏مسیحی خبریں

زیادتی کا نشانہ بننے والی 14 سالہ مسیحی بچی کے والدین کو ہرممکن قانونی ومالی مدد کی یقین دہانی

صوبائی وزیر برائے اقلیتی امور وانسانی حقوق طاہر خلیل سندھو نے کہا ہے کہ حکومت زیادتی کا شکار ہونیوالی  14 سالہ مسیحی لڑکی کے ساتھ ہے, یہ واقع ضلع شیخوپورہ کے علاقے فاروق آباد میں پیش آیا جہاں 14 سالہ کمسن مسیحی لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ تفتیش مکمل ہوتے ہی انصاف کیا جائے گا۔
صوبائی وزیر طاہر خلیل نے یقین دہانی کروائی کہ حکومت اظہار یکجہتی کیلئے متاثرہ خاندان کے ساتھ کھڑی ہے،انکا کہنا تھا کہ سیاسی حریف مفاد کی خاطر حقائق کو موڑنے کی کوشش کررہے ہیں۔ صوبائی وزیر نے یہ بات 13 جولائی بروز بدھ اپنے بیان میں کہی جب وہ متاثرہ خاندان سے ملاقات کیلئے آئے تھے۔ صوبائی وزیر برائے اقلیتی امور وانسانی حقوق طاہر خلیل سندھو نے متاثرہ خاندان کو یقین دہانی کرائی کہ حکومت انکی مکمل قانونی و مالی مدد کرے گی۔
مقامی مسلم کمیونٹی نے گواہی دی کہ متاثرہ لڑکی کا خاندان اس گاؤں میں کئی سال سے پرامن طریقے سے رہ رہا ہے،ایسے واقعات نہایت غیرانسانی ہیں۔ متاثرہ خاندان سے صوبائی وزیر برائے اقلیتی امور وانسانی حقوق کی اس ملاقات میں متعلقہ تھانے کے ایس ایچ او سمیت رکن پنجاب اسمبلی طارق مسیح گل بھی شامل تھے۔

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں