پاکستانی‏مسیحی خبریں

ٹوبہ ٹیک سنگھ : اٹھارہ سالہ مسیحی نوجوان کو قتل کرکے درخت سے لٹکا دیا گیا

ٹوبہ ٹیک سنگھ (پی سی پی ) 18سالہ مسیحی نوجوان کو بااثر ملزمان نے بے رحمی سے تشدد کر کے مار دیا اور بعد میں لاش کو گلیوں میں گھسیٹا اور گلے میں رسی باندھ کر درخت سے لٹکا دیا گیا ۔ پیر محل,ٹوبہ ٹیک سنگھ کے نواحی علاقے شادمان کالونی میں مسیحی نوجوان قیصرمسیح کو بلا پہلوان اور اس کے بیٹے محمد حیدر نے تشدد کر کے قتل کر دیا اورسرِعام لاش کو درخت سے لٹکا دیا۔پولیس نے ملزمان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی اور ٹال مٹول کر رہی ہے
مقتول کے والد سردار مسیح نے بتایا کہ میرے بیٹے کو بے دردی سے محمد حیدر اور اسکے باپ بلا پہلوان نے قتل کر دیا اور کئی گھنٹے میری آنکھوں کے سامنے میرے بیٹے کی لاش کو درخت سے لٹکائے رکھا , لیکن قاتلوں نے مجھے ایک پل کیلئے بھی اپنی بیٹے کی لاش کو نیچے اتارنے نہیں دیا ۔
واقعہ کی تفصیل بیان کرتے ہوئے سردار مسیح نے بتایا کہ ان کے بیٹے قیصر مسیح اور محمد بلا (بلا پہلوان ) کے بیٹے محمد حیدر کے درمیان چھوٹی سی بحث ہو گئی تھی لیکن بعد میں بات اس فیصلہ پر ختم ہو گئی کہ مقتول قیصر مسیح سب کے سامنے محمد حیدر کے پیروں پر گھر کر معافی کی بھیک مانگے,لیکن محمد حیدر اس بات سے مطمئن نہ ہوا کیونکہ وہ اس بات پر غصہ تھا کہ ایک مسیحی لڑکے نے اس سے بحث کرنے کی ہمت کیسے کی ۔
حاصل ہونیوالی معلومات کے مطابق پولیس نے ملزمان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی اور ٹال مٹول کر رہی ہے اور نہ ہی ابھی تک ملزمان کی خلاف کوئی کیس دائر کیا ہے ۔

Related Articles

Back to top button
شیئر کریں